Play Copy
ﮑﮒﮓﮔﮕﮖﮗﮘﮙﮚﮛﮜﮝﮞﮟﮠﮡﮢﮣﮤﮥﮦﮧ

127. اور (اپنے جابرانہ اِقتدار کے لیے خطرہ محسوس کرتے ہوئے) قومِ فرعون کے سرداروں نے (فرعون سے) کہا: کیا تو موسیٰ (علیہ السلام) اور اس کی قوم کو چھوڑ دے گا کہ وہ ملک میں فساد پھیلائیں؟ اور (پھر کیا) وہ تجھ کو اور تیرے معبودوں کو چھوڑ دیں گے؟ اس نے کہا: (نہیں) اب ہم ان کے لڑکوں کو قتل کردیں گے (تاکہ ان کی مردانہ افرادی قوت ختم ہو جائے) اور ان کی عورتوں کو زندہ رکھیں گے (تاکہ ان سے زیادتی کی جاسکے) اور بے شک ہم ان پر غالب ہیںo

127. And (considering it a threat to their tyrannous rule) the chiefs of the people of Pharaoh said (to Pharaoh): ‘Will you leave Musa (Moses) and his people to launch strife in the country? And (then) will they spare you and your gods?’ He said: ‘(No,) we shall now kill their sons (to exhaust their male numerical strength), and let their women live (so that they may be wronged). And surely, we hold sway over them.’

(al-A‘rāf, 7 : 127)