Play Copy
ﭿﮀﮁﮂﮃﮄﮅﮆﮇﮈﮉﮊﮋﮌﮍﮎﮏﮐﮑﮒﮓﮔﮕﮖﮗﮘﮙﮚﮛﮜﮝﮞﮟ

13. بیشک تمہارے لئے ان دو جماعتوں میں ایک نشانی ہے (جو میدانِ بدر میں) آپس میں مقابل ہوئیں، ایک جماعت (یعنی اہل ایمان) نے اﷲ کی راہ میں (دفاعی) جنگ کی اور دوسری کافر تھی (یعنی کفار مکہ جنہوں نے مدینہ کے پُر امن مسلمانوں پر فوج کشی کی) وہ انہیں (اپنی) آنکھوں سے اپنے سے دوگنا دیکھ رہے تھے، اور اﷲ اپنی مدد کے ذریعے جسے چاہتا ہے تقویت دیتا ہے، یقینا اس واقعہ میں آنکھ والوں کے لئے (بڑی) عبرت ہےo

13. There is certainly a sign for you in the two parties that encountered each other (in the battlefield of Badr)—one party (i.e., the Muslims) fought (a defensive war) in the cause of Allah, and the other comprised the disbelievers (i.e., the Meccan aggressors who invaded the peaceful Muslims of Medina). They saw them with their (own) eyes as twice their own number. And Allah provides strength with His reinforcement to whom He wills. In this incident, there is surely a (notable) lesson of warning for those who have eyes.

(Āl-i-‘Imrān, 3 : 13)