irfan-ul-quran irfan-ul-quran irfan-ul-quran irfan-ul-quran irfan-ul-quran irfan-ul-quran irfan-ul-quran irfan-ul-quran irfan-ul-quran irfan-ul-quran irfan-ul-quran
Ayat of the Day: It is not Allah’s Glory that He should take (to Himself anyone as) a son. Holy and Glorified is He (above this). When He decrees any matter, He only says to it: ‘Be,’ and it becomes. (Maryam, 19:35)
irfan-ul-quran irfan-ul-quran
 
Irfan-ul-Quran: - Qāf (

Sura Qāf

()
Sura : Makki by Tilawat : 50 by Reveal : 34 Ruku` : 3 Ayats : 45 Part No. : 26
In the Name of Allah, Most Compassionate, Ever-Merciful
1. ق (حقیقی معنی اﷲ اور رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم ہی بہتر جانتے ہیں)، قسم ہے قرآنِ مجید کیo
1. Qaf. (Only Allah and the Messenger [blessings and peace be upon him] know the real meaning.) By the Glorious Qur’an,
2. بلکہ اُن لوگوں نے تعجب کیا کہ اُن کے پاس اُنہی میں سے ایک ڈر سنانے والا آگیا ہے، سو کافر کہتے ہیں: یہ عجیب بات ہےo
2. But they wondered that a Warner had come to them from amongst themselves. So the disbelievers say: ‘This is strange!
3. کیا جب ہم مَر جائیں گے اور ہم مٹّی ہو جائیں گے (تو پھر زندہ ہوں گے)؟ یہ پلٹنا (فہم و ادراک سے) بعید ہےo
3. Is it that when we are dead and have become dust (then we shall become alive again)? This return is far (from understanding and perception).’
4. بیشک ہم جانتے ہیں کہ زمین اُن (کے جسموں) سے (کھا کھا کر) کتنا کم کرتی ہے، اور ہمارے پاس (ایسی) کتاب ہے جس میں سب کچھ محفوظ ہےo
4. Definitely, We know how much the earth (eats up and) consumes their (bodies), and We have a Book wherein everything is preserved.
5. بلکہ (عجیب اور فہم و ادراک سے بعید بات تو یہ ہے کہ) انہوں نے حق (یعنی رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اور قرآن) کو جھٹلا دیا جب وہ اُن کے پاس آچکا سو وہ خود (ہی) الجھن اور اضطراب کی بات میں (پڑے) ہیںo
5. But (strange and far from understanding is this that) they denied the truth (i.e., the Messenger and the Qur’an) when it came to them. So they have themselves stepped into anxiety and confusion.
6. سو کیا انہوں نے آسمان کی طرف نگاہ نہیں کی جو ان کے اوپر ہے کہ ہم نے اسے کیسے بنایا ہے اور (کیسے) سجایا ہے اور اس میں کوئی شگاف (تک) نہیں ہےo
6. Have they not looked at the sky above them how We made it and (how) We adorned it, and there is no crack in it?
7. اور (اِسی طرح) ہم نے زمین کو پھیلایا اور اس میں ہم نے بہت بھاری پہاڑ رکھے اور ہم نے اس میں ہر قسم کے خوش نما پودے اُگائےo
7. And (in the same way) We spread out the earth and We placed in it heavy mountains and produced in it every kind of beautiful plants.
8. (یہ سب) بصیرت اور نصیحت (کاسامان) ہے ہر اس بندے کے لئے جو (اﷲ کی طرف) رجوع کرنے والا ہےo
8. All that is (a source of) insight, direction and guidance for every servant who turns (to Allah in repentance).
9. اور ہم نے آسمان سے بابرکت پانی برسایا پھر ہم نے اس سے باغات اگائے اور کھیتوں کا غلّہ (بھی)o
9. And We showered blessed water from the sky and then produced with it gardens and (also) the grain of harvests,
10. اور لمبی لمبی کھجوریں جن کے خوشے تہ بہ تہ ہوتے ہیںo
10. And date-palms soaring high with layers of spathes.
11. (یہ سب کچھ اپنے) بندوں کی روزی کے لئے (کیا) اور ہم نے اس (پانی) سے مُردہ زمین کو زندہ کیا، اسی طرح (تمہارا) قبروں سے نکلنا ہوگاo
11. (This all is done as) sustenance for the servants, and We gave life with this (water) to the dead earth. In like manner is (your) coming forth from the graves.
12. اِن (کفّارِ مکہ) سے پہلے قومِ نوح نے، اور (سرزمینِ یمامہ کے اندھے) کنویں والوں نے، اور (مدینہ سے شام کی طرف تبوک کے قریب بستیِ حجر میں آباد صالح علیہ السلام کی قوم) ثمود نے جھٹلایاo
12. Before these (disbelievers of Mecca), the people of Nuh (Noah) and the people of the blind well (al-Rass in al-Yamama) and Thamud (the people of Salih, in the town of al-Hijr near Tabuk on the Medina-Syria road),
13. اور (عُمان اور اَرضِ مَہرہ کے درمیان یمن کی وادئ اَحقاف میں آباد ہود علیہ السلام کی قومِ) عاد نے اور(مصر کے حکمران) فرعون نے اور (اَرضِ فلسطین میں سدوم اور عمورہ کی رہنے والی) قومِ لُوط نےo
13. And ‘Ad (the people of Hud in Ahqaf valley of Yemen situated between Oman and the al-Mahra) and Pharaoh (the ruler of Egypt) and the people of Lut [Lot] (living in Sodom and ‘Amura [Gomorrah] in Palestine),
14. اور (مَدیَن کے گھنے درختوں والے بَن) اَیکہ کے رہنے والوں نے (یہ قومِ شعیب تھی) اور (بادشاہِ یَمن اسعَد ابوکریب) تُبّع (الحِمیَری) کی قوم نے، (الغرض اِن) سب نے رسولوں کو جھٹلایا، پس (اِن پر) میرا وعدۂ عذاب ثابت ہو کر رہاo
14. And the inhabitants of al-Ayka (the wood in Madyan, the people of Shu‘ayb), and the people of Tubba‘ (the people of As‘ad Abu Kurib al-Himyari, the King of Yemen)—(in sum) all (of them) rejected the Messengers. So My promise of punishment (against them) proved true.
15. سو کیا ہم پہلی بار پیدا کرنے کے باعث تھک گئے ہیں؟ (ایسا نہیں) بلکہ وہ لوگ اَزسرِنَو پیدائش کی نسبت شک میں (پڑے) ہیںo
15. So are We tired by the first creation? (Nay!) In fact, it is they who are in doubt about the new creation.
16. اور بیشک ہم نے انسان کو پیدا کیا ہے اور ہم اُن وسوسوں کو (بھی) جانتے ہیں جو اس کا نفس (اس کے دل و دماغ میں) ڈالتا ہے۔ اور ہم اس کی شہ رگ سے بھی زیادہ اس کے قریب ہیںo
16. And assuredly, We created man and We know (also) the doubts which his (ill-commanding) self puts (into his heart and mind). And We are nearer to him than his jugular vein.
17. جب دو لینے والے (فرشتے اس کے ہر قول و فعل کو تحریر میں) لے لیتے ہیں (جو) دائیں طرف اور بائیں طرف بیٹھے ہوئے ہیںo
17. When the two receivers receive (the recording angels write down his every communication and work), sitting on the right and on the left,
18. وہ مُنہ سے کوئی بات نہیں کہنے پاتا مگر اس کے پاس ایک نگہبان (لکھنے کے لئے) تیار رہتا ہےo
18. Not a word does he utter but a watcher is there beside him ready (to write it).
19. اور موت کی بے ہوشی حق کے ساتھ آپہنچی۔ (اے انسان!) یہی وہ چیز ہے جس سے تو بھاگتا تھاo
19. And the stupor of death comes with the truth. (O man,) that is what you were running away from!
20. اور صُور پھونکا جائے گا، یہی (عذاب ہی) وعید کا دن ہےo
20. And the Trumpet will be blown. It is (this torment) the Day of Warning.
21. اور ہر جان (ہمارے حضور اس طرح) آئے گی کہ اُس کا ایک ہانکنے والا (فرشتہ) اور (دوسرا اعمال پر) گواہ ہوگاo
21. And every soul will appear (before Our presence), one (angel) forcing it forward and (the other) a witness (to its actions).
22. حقیقت میں تُو اِس (دن) سے غفلت میں پڑا رہا سو ہم نے تیرا پردۂ (غفلت) ہٹا دیا پس آج تیری نگاہ تیز ہےo
22. The truth is that you were negligent of this (Day), so We have removed your veil (of negligence) and Today your sight is sharp.
23. اور اس کے ساتھ رہنے والا (فرشتہ) کہے گا: یہ ہے جو کچھ میرے پاس تیار ہےo
23. And his close companion (angel) will say: ‘That is what I have ready (for you).’
24. (حکم ہوگا): پس تم دونوں (ایسے) ہر ناشکرگزار سرکش کو دوزخ میں ڈال دوo
24. (It will be commanded:) ‘Both of you hurl into Hell every (such) ungrateful rebel,
25. جو نیکی سے روکنے والا ہے، حد سے بڑھ جانے والا ہے، شک کرنے اور ڈالنے والا ہےo
25. That hinders from good, exceeds the limits, doubts and puts into doubt,
26. جس نے اﷲ کے ساتھ دوسرا معبود ٹھہرا رکھا تھا سو تم اسے سخت عذاب میں ڈال دوo
26. That had set up another god besides Allah. So hurl him into a fierce torment.’
27. (اب) اس کا (دوسرا) ساتھی (شیطان) کہے گا: اے ہمارے رب! اِسے میں نے گمراہ نہیں کیا بلکہ یہ (خود ہی) پرلے درجے کی گمراہی میں مبتلا تھاo
27. (Now) his (other) companion (Satan) will say: ‘O our Lord, I did not misguide him. In fact, he was himself suffering from misguidance of extreme degree.’
28. ارشاد ہوگا: تم لوگ میرے حضور جھگڑا مَت کرو حالانکہ میں تمہاری طرف پہلے ہی (عذاب کی) وعید بھیج چکا ہوںo
28. Allah will say: ‘Do not dispute in My presence whilst I have already sent you the warning (of punishment).
29. میری بارگاہ میں فرمان بدلا نہیں جاتا اور نہ ہی میں بندوں پر ظلم کرنے والا ہوںo
29. The command is never changed in My presence. Nor do I wrong the servants.’
30. اس دن ہم دوزخ سے فرمائیں گے: کیا تو بھر گئی ہے؟ اور وہ کہے گی: کیا کچھ اور زیادہ بھی ہےo
30. That Day We shall ask Hell: ‘Are you filled up?’ And it will say: ‘Is there any more?’
31. اور جنت پرہیزگاروں کے لئے قریب کر دی جائے گے، بالکل دُور نہیں ہوگیo
31. And Paradise will be brought close to the pious; it will not be distant at all.
32. (اور اُن سے ارشاد ہوگا): یہ ہے وہ جس کا تم سے وعدہ کیا گیا تھا (کہ) ہر توبہ کرنے والے (اپنے دین اور ایمان کی) حفاظت کرنے والے کے لئے (ہے)o
32. (And it will be said to them:) ‘This is what you were promised; (it is meant) for everyone who turns to Allah in repentance and who guards (his Din [Religion] and faith),
33. جو (خدائے) رحمان سے بِن دیکھے ڈرتا رہا اور (اﷲ کی بارگاہ میں) رجوع و اِنابت والا دل لے کر حاضر ہواo
33. Who fears the Most Kind (Lord) unseen, and comes (before the presence of Allah) with a heart turned in repentance.
34. اس میں سلامتی کے ساتھ داخل ہو جاؤ، یہ ہمیشگی کا دن ہےo
34. Enter it in peace; this is the Day of Eternity.’
35. اِس (جنت) میں اُن کے لئے وہ تمام نعمتیں (موجود) ہوں گی جن کی وہ خواہش کریں گے اور ہمارے حضور میں ایک نعمت مزید بھی ہے (یا اور بھی بہت کچھ ہے، سو عاشق مَست ہوجائیں گے)o
35. All those blessings which they will long for will be there for them in that (Paradise), and there is still another blessing with Us (or much more; so the lovers will be enchanted).
36. اور ہم نے اُن (کفار و مشرکینِ مکہّ) سے پہلے کتنی ہی اُمتوں کو ہلاک کر دیا جو طاقت و قوّت میں ان سے کہیں بڑھ کر تھیں، چنانچہ انہوں نے (دنیا کے) شہروں کو چھان مارا تھا کہ کہیں (موت یا عذاب سے) بھاگ جانے کی کوئی جگہ ہوo
36. And how many generations We destroyed before them (the disbelievers and idolaters of Mecca) who were far stronger in power and might than they! So they searched the cities (of the world) to run away somewhere for refuge (from death or torment).
37. بیشک اس میں یقیناً انتباہ اور تذکّر ہے اس شخص کے لئے جو صاحبِ دل ہے (یعنی غفلت سے دوری اور قلبی بیداری رکھتا ہے) یا کان لگا کرسُنتا ہے (یعنی توجہ کو یک سُو اور غیر سے منقطع رکھتا ہے) اور وہ (باطنی) مشاہدہ میں ہے (یعنی حسن و جمالِ الوھیّت کی تجلّیات میں گم رہتا ہے)o
37. There is indeed sure warning and admonition in it for him who has a heart (vigilant and awake, far from negligence,) or listens with active attention (i.e., focuses attention having no contact with anyone other than Allah) and is in a state of (spiritual) vision (i.e., remains lost in the effulgent disclosures of Allah’s absolute beauty).
38. اور بیشک ہم نے آسمانوں اور زمین کو اور اُس (کائنات) کو جو دونوں کے درمیان ہے چھ زمانوں میں تخلیق کیا ہے، اور ہمیں کوئی تکان نہیں پہنچیo
38. And surely, We have created the heavens and the earth and that (universe) which is between the two in six periods and no fatigue has touched Us.
39. سو آپ اُن باتوں پر جو وہ کہتے ہیں صبر کیجئے اور اپنے رب کی حمد کے ساتھ تسبیح کیجئے طلوعِ آفتاب سے پہلے اور غروبِ آفتاب سے پہلےo
39. So be patient with what they say and glorify your Lord with praise before sunrise and before sunset.
40. اور رات کے بعض اوقات میں بھی اس کی تسبیح کیجئے اور نمازوں کے بعد بھیo
40. And also glorify Him during some hours of the night and after the Prayers as well.
41. اور (اُس دِن کا حال) خوب سن لیجئے جس دن ایک پکارنے والا قریبی جگہ سے پکارے گاo
41. And listen attentively (of the Day) when a caller will call from a near place,
42. جس دن لوگ سخت چنگھاڑ کی آواز کو بالیقین سنیں گے، یہی قبروں سے نکلنے کا دن ہوگاo
42. The Day when people will assuredly hear a mighty roar. That will be the Day of coming out from the graves.
43. بیشک ہم ہی زندہ رکھتے ہیں اور ہم ہی موت دیتے ہیں اور ہماری ہی طرف پلٹ کر آنا ہےo
43. Surely, it is We Who give life, and it is We Who cause death, and to Us is the return.
44. جِس دن زمین اُن پر سے پھٹ جائے گی تو وہ جلدی جلدی نکل پڑیں گے، یہ حشر (پھر سے لوگوں کو جمع کرنا) ہم پر نہایت آسان ہےo
44. The Day when the earth will split apart from above them, they will come out in haste. This raising them alive (i.e., gathering the people once again) is quite easy for Us.
45. ہم خوب جانتے ہیں جو کچھ وہ کہتے ہیں اور آپ اُن پر جبر کرنے والے نہیں ہیں، پس قرآن کے ذریعے اس شخص کو نصیحت فرمائیے جو میرے وعدۂ عذاب سے ڈرتا ہےo
45. We know best what they say, and you are not the one to coerce them. So advise by means of the Qur’an anyone who fears My threat of punishment.
Previous Sura     Index     Next Sura
Read Quran | Listen to Quran | Search Quran | Download Quran | Buy Quran
Comments | The Translator | Site Map | Privacy Policy | Urdu version | Download Fonts
Minhaj-ul-Quran | Welfare | Overseas | Multimedia | Books | Durood | Magazines | Publications
irfan-ul-quran irfan-ul-quran
Developed By : Minhaj Internet Bureau, Lahore PK
elearning Minhaj-ul-Quran