اس سورہ پاک کا نام ’سبا‘ ہے۔ یہ سورہ مکی ہے۔ سورہ کی ابتدا حمد باری تعالیٰ سے کی جا رہی ہے اور اس کی کبریائی اور عظمت کا اعلان کیا جا رہا ہے۔ نیز بتا دیا کہ حضور نبی رحمت محمد مصطفی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) کی بعثت تمام نوع انسانی کے لئے تا قیام قیامت حضور (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) راہنما بن کر تشریف لے آئے ہیں۔ حضور (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) کے بعد نہ کسی نئے نبی کی ضرورت ہے اور نہ ہی کوئی نیا نبی مبعوث ہوگا۔

Play Copy

قُلۡ اَرُوۡنِیَ الَّذِیۡنَ اَلۡحَقۡتُمۡ بِہٖ شُرَکَآءَ کَلَّا ؕ بَلۡ ہُوَ اللّٰہُ الۡعَزِیۡزُ الۡحَکِیۡمُ ﴿۲۷﴾

27. فرما دیجئے: مجھے وہ شریک دکھاؤ جنہیں تم نے اللہ کے ساتھ ملا رکھا ہے، ہرگز (کوئی شریک) نہیں ہے! بلکہ وہی اللہ بڑی عزت والا، بڑی حکمت والا ہےo

27. Say: ‘Show me the partners you have associated with Allah. There is no (partner) at all. Truly, He is the One Who is Almighty, Most Wise.’

(سَبـَا، 34 : 27)