اس سورہ مبارکہ کا نام القصص ہے۔ یہ بھی مکی زندگی کے درمیانی عہد میں نازل ہونے والی سورتوں میں سے ایک سورہ ہے۔ اس کے مضامین میں استعماری طاقتوں کا بطلان، اسلام کے نظام معاشیات، اسلام کے نظام قانون، اسلام کے نظام اخلاق کی تفصیلات شامل ہیں۔

Play Copy

فَلَمَّاۤ اَنۡ اَرَادَ اَنۡ یَّبۡطِشَ بِالَّذِیۡ ہُوَ عَدُوٌّ لَّہُمَا ۙ قَالَ یٰمُوۡسٰۤی اَتُرِیۡدُ اَنۡ تَقۡتُلَنِیۡ کَمَا قَتَلۡتَ نَفۡسًۢا بِالۡاَمۡسِ ٭ۖ اِنۡ تُرِیۡدُ اِلَّاۤ اَنۡ تَکُوۡنَ جَبَّارًا فِی الۡاَرۡضِ وَ مَا تُرِیۡدُ اَنۡ تَکُوۡنَ مِنَ الۡمُصۡلِحِیۡنَ ﴿۱۹﴾

19. سو جب انہوں نے ارادہ کیا کہ اس شخص کو پکڑیں جو ان دونوں کا دشمن ہے تو وہ بول اٹھا: اے موسٰی! کیا تم مجھے (بھی) قتل کرنا چاہتے ہو جیسا کہ تم نے کل ایک شخص کو قتل کر ڈالا تھا۔ تم صرف یہی چاہتے ہو کہ ملک میں بڑے جابر بن جاؤ اور تم یہ نہیں چاہتے کہ اصلاح کرنے والوں میں سے بنوo

19. Then, when Musa (Moses) decided to catch hold of the person who was an enemy to both of them, he exclaimed: ‘O Musa (Moses), do you want to kill me (too) as you killed a man the day before? You intend only to become a tyrant in the land, and you do not desire to become one of the reformers.’

(الْقَصَص، 28 : 19)